Drama Ehd-e-Wafa | Episode 18 - 19 Jan 2020 (ISPR Official)

ISPR Official

ISPR Official

7 mill ganger4 481

    Ehd-e-Wafa is a 2019 Pakistani military drama television series co produced by Inter-Services Public Relations and Momina Duraid under MD Productions.It has an ensemble cast with Ahad Raza Mir, Ahmed Ali Akbar, Osman Khalid Butt, Wahaj Ali, Zara Noor Abbas, Vaneeza Ahmed and Hajra Yamin in pivot roles.
    Cast
    Ahad Raza Mir as Saad
    Ahmed Ali Akbar as Sheharyar
    Osman Khalid Butt as Shah Zain
    Wahaj Ali as Shariq
    Alizeh Shah as Dua
    Zara Noor Abbas as Rani
    Hajra Yamin
    Vaneeza Ahmad as Saad's mother
    Mohammed Ahmed
    Komal Sajid as Saad's sister
    Faraz Inam as Saad's father

    Directed By
    Muhammad Saife Hasan
    Written By
    Mustafa Afridi
    Produced By
    ISPR & Momina Duraid Production

    Publisert Måned siden

    Kommentarer

    1. Fouzia Khan

      Buhat khushi hoti hea is dramey main salaam ka istemaal buhat kia gaya hea werna tu her dramey main jaise trend ban gaya hea hi aur bye ka

    2. Ibrahim Khan

      😂😂😂😂😂😂😂

    3. Tabassum Naaz

      Pakistani drama serial is awesome amazing and mind-blowing 😘😘

    4. Zahir Khan

      Pakistan Zandbad

    5. Irfaan Ali

      Bulaate hai par jaane kaa niiii.💕

    6. Cr Jan

      Sad or duwa dono hi bohat Acha hy

    7. Cr Jan

      Kamal ka drama hy yar

    8. Shweta Gandhi

      Son of Niyaz Ahmed has stolen whole show🤣🤣

    9. Usman Aalam

      I love duva

    10. koko khani

      Masoma is sooo cutee

    11. Zeegar Khan

      Rani and gulzar ❤️

    12. ANIMALs LOVERs

      one comment for PAKISTAN

    13. ANIMALs LOVERs

      Which drama industry is better India:Like Pakistan:Comment

    14. مريم اقربي

      مـــين🥰 يـرحــــب🥰 بــــي🥰 يــضـغط لايــــك🥰ويـراســــلنـــي خـاص واشـتـرك بـقـنـاتـــي *whatapps**00 46736379707*💋💋💋

    15. Jaffar Shigri

      Here the real face of pak army.......... love from gilgit baltistan.

    16. Khalid Awan

      Zabrdast darama ha yar super

    17. ghulam madni

      Very very nice drama

    18. chandoor gee

      اسلام زندہ باد پاکستان زندہ باد عوام زندہ باد پاکستان آرمی زندہ باد آئی ایس آئی زندہ باد مقام دوست بیدار لوگ

    19. Get Movies

      Love Pak Army ❤️

    20. Mujeeb Akhter

      Ye show entertain ke sath sath Pakistan ke social and political issues bhi uthata hai ....

    21. iftikhar ahmed

      Pak army zindabad

    22. Yasmeen Shaikh

      Kisko kisko sariq ka role best lg ra h .....

    23. parvinder sedha

      I m from India but very big follower of Pakistani dramas ,this one seriously best drama because of all the characters in this serial...Rani and gulzaar best but all four hero life also have potrated in very good way ...enjoying every episode

    24. Fareeha Shams

      27:00

    25. Fareeha Shams

      1122

    26. Ajay Khan

      Aega shahzain aega chain hahaha My favorite Alot of thanks ispr

    27. Ajay Khan

      Great great great drama

    28. Maheen Usama

      Rani ka gateup ub better h wrna phly to purany zamano ke gao walio ke trhn thn.

    29. Muhammad Kashif

      Kya Shit hai ye commercial wala yar Sara maza kharab kar deta hai

    30. Humayoon Qasmi

      Hahahaha Surma kalay nain ka 😂😂😂

    31. Abdullah Mohammed Khalil Sharif

      Anyone knows the name of Rani's friend?? 😬 😬

    32. khawar khawar

      awesome serial i lov this

    33. Ameen Kakar

      Hamara koi dushman nai hain hame bs talime ki zarurat hain ok

    34. Khuram Shahzad

      Pak army zindabab ♥️ 🇵🇰

    35. Rana Qayyum

      I love this drama💞💕

    36. Ali Nawab

      Smartphones???

    37. Nimra Munawar

      Shehr yar is my favorite 😍

    38. Saqib Malik Saqib

      Best drama😍😍

    39. Ali Raza

      للہ‎ پاک 2020 میں ہم سب کو مکّہ اور مدینہ دیکھا دے ❤

    40. Jamshaid Abbas

      saad ka till mujhy bht pasnd hy he is so cute 😘😘

    41. Asif gujjar noon Asif gujjar noon

      Wao zabardst insaniyat ma dosat apny paraye sab aak jasa hotay ha yahi insaniyat hoti ha

    42. Atlas Khan

      Ya unlike mat kare✨✨✨

    43. Zaheer Babar

      Rani Kay scene buhat ala hoty hain kis kis ko achy lagty hain like kar

    44. SHAHOO

      70 saal ho gaey... is Qoam ne aj tak kisi se hisab nhi liya.....

    45. Lubna Shaheen

      saad khusra lg rha wardi ma shakal sy

    46. Mamoon Khan

      Boht acha

    47. Mashal Cochai

      Masooma and Shahryar, Rani and Shahzeb love stories are much much better and natural than the other two which are fakish, decadent and westernised.

    48. MrYes Waqas Ahmad

      Hahhha kmal ki story likhi h yr 👌👌 (06:19 PM) 28-Jan-2020

    49. Adil Saeed

      Where is other family of this house....???

    50. Khattak Mobile

      Hey

    51. Jabbar Kamboh

      Pakistaniyo ko to bht passnd aya ye darma or kis country se dekhty Hain esy log

    52. shazia manzoor

      Well said shehryar

    53. Íqrå Kåñwål Shah Gillani

      toba hadh h surma kaaly nain ka vote malik shahzain ka😹😹😹😹😹😹😹😹😹😹😹😹😹😹

    54. Hussain Akbar

      Is dramy ne sb ko kharaab aur sirf ARMY ko he sahi zahir krny ki sar tor koshish ki gayi ha but impossible....

    55. Urdu Adab

      ان دنوں جرمنی میں کچھ کاغذات کی وجہ سے کافی سارے دفاتر کے چکر لگانے پڑھ رہے ہیں۔ ایک ہفتے کے دوران میں مختلف شہروں کے دس بارہ دفاتر میں جا چکا ہوں۔ سبھی دفاتر میں ایک چیز مجھے حیران کر رہی تھی۔ یہاں دفاتر میں کام کرنے والا تقریباً سو فیصد عملہ پچاس سال سے زیادہ عمر کا تھا۔ شروع شروع میں تو مجھے یہ سب کچھ نارمل لگا لیکن جب ایک کے بعد ایک تمام دفاتر میں پچاس سے ساٹھ سال کے ادھیڑ عمر افراد( جنہیں ہم اپنی زبان میں بابے اور مایاں کہتے ہیں ) ہی دیکھے تو میری لکھاری کی حس جاگ اٹھی۔ میں نے اپنے ٹرانسلیٹر سے اس کے متعلق پوچھنا شروع کر دیا۔ آخر جرمنی جیسے امیر ترین اور خوبصورت ملک کے لوکل دفاتر میں بوڑھے کیا کر رہے ہیں۔ تو جناب مجھے جو معلومات ملی وہ حیران کن تھیں اور میں وہ یہاں بیان کر رہا ہوں۔ دنیا کے کسی بھی ملک میں پرائیویٹ ملازمت پچاس سال سے زائد افراد کو نہیں ملتی۔ تمام مالکان نوجوان اور قدرے قبول صورت افراد کو ہی نوکری پر رکھتے ہیں۔ پچاس سال کے بعد اگر کسی آدمی کی نوکری چھوٹ جائے تو اسے دوبارہ نئی نوکری نہیں ملتی وہ اگلے بیس سال تک کام کر سکتا ہے لیکن اسے کہیں بھی کام نہیں ملتا۔ ایسے افراد معاشرے پر بوجھ ہوتے ہیں۔ جرمن حکومت ایسے افراد کو سرکاری دفاتر میں ملازمت دیتی ہے۔ یہ صرف ہفتے میں چار دن اور پانچ گھنٹے کی نوکری ہوتی ہے اور تنخواہ بھی تھوڑی ہوتی ہے۔ یہ بوڑھے افراد انتہائی خوش اخلاق ہوتے ہیں اور دفتر میں آنے والے لوگوں کی عزت بھی بہت کرتے ہیں۔ جرمن حکومت کے اس چھوٹے سے فیصلے سے دس لاکھ سے زائد بوڑھے افراد کو روزگار مل گیا۔ چلیں اب پاکستان کی طرف آتے ہیں۔ اسلامی جمہوریہ پاکستان میں اٹھارہ سال کی عمر میں سرکاری ملازمت ملتی ہے۔ بیس پچیس سال کی نوکری اور چالیس سال کی عمر میں ریٹائرڈ ۔ اب وہ شخص اگلے ساٹھ سال تک پنشن کی صورت میں پاکستان کا خون چوستا ہے۔ پرائیویٹ سیکٹر میں لوگ چالیس پچاس تک کام کرتے ہیں اور پھر کام ملنا بند ہو جائے تو ان کے دس بارہ سال کے بچے ہوٹلوں اور ورکشاپس میں کام کر کے گھر چلا رہے ہوتے ہیں۔ جرمنی ایک کافر ملک ہے۔ یہاں عورتیں آدھ ننگے کپڑے پہنتی ہیں۔ شراب خانے جوے خانے ہیں۔ لیکن یہاں ایک بھی بھکاری نہیں ہے۔ یہاں ایک بھی بے گھر نہیں ہے۔ جرمنی کے ایک سرے سے لیکر دوسرے سرے تک آٹھ کروڑ لوگ بستے ہیں۔ یہ ملک ہمارے بلوچستان کے رقبے کے برابر ہے۔ آٹھ کروڑ لوگوں میں سے کوئی ایک بھی ایسا نہیں ہے جو رات کو بھوکا کھلے آسمان تلے سوتا ہو۔ کیوں۔۔۔ کیونکہ یہ لوگ انسانیت کو سب سے آگے رکھتے ہیں۔ ہمارہ اسلام یہی تو سکھاتا ہے۔ دریائے فرات کے کنارے کتا اگر بھوک سے مرتا ہے تو اس کا جواب دار کون ہے۔ اس سوال کا جواب ہمیں چودہ سو سال پہلے مل گیا تھا۔ لیکن ہمارے حکمران اور عوام آج بھی اندھے اور بہرے بنے ہوئے ہیں۔ اے وقت کے حکمرانوں آج دریائے سندھ کے کنارے کتے نہیں انسان بھوک سے مر رہے ہیں۔ سڑکوں اور پلوں کی سیاست سے باہر نکلو اور کچھ قانون سازی بھی کر جاؤ۔ سرکاری ملازمت اٹھارہ کی بجائے چالیس سال سے اوپر تک لے جاؤ۔ اٹھارہ بیس سال کے نوجوانوں کو پرائیویٹ سیکٹر میں جانے دو انہیں کاروبار کی طرف لے کر جاؤ۔ وہ کاروبار کریں گے تو نئی نوکریاں پیدا ہونگی۔ ملک ترقی کرے گا۔ ورنہ آج کی نئی نسل تو سکول میں داخل ہوتے ہی سرکاری نوکری کے خواب دیکھنا شروع کر دیتی ہے۔ ملک کاروبار سے ترقی کرتے ہیں۔ سرکاری نوکریوں سے نہیں۔ اگر سرکاری نوکری کو جنت بنا دو گے تو کوئی بھی کاروبار نہیں کرے گا۔ اور ملک ایسے ہی آئی ایم ایف کے قرضوں پر چلتا رہے گا۔ چالیس پچاس لاکھ سرکاری ملازمین خوش اور باقی پورا پاکستان دریائے سندھ کے کنارے بھوک سے مرتا رہے گا۔ رضوان علی گھمن۔ یہ پیراگراف قانون سازی کے موضوع پر لکھے گئے ایکشن ناول۔۔۔۔۔ جنت ریپبلک ۔۔۔۔۔ سے لیا گیا ہے۔ جنت ریپبلک ایک سپر ہیرو ایکشن ناول ہے جس میں ایک پاکستانی آئی ایس آئی آفیسر میجر راضی وزیراعظم بن کر ملک کو ٹھیک کر دیتا ہے۔ جنت ریپبلک ناول میں وہ تمام تفصیلات لکھی گئی ہیں جن پر عمل کر کے پاکستان جنت ریپبلک بن سکتا ہے۔ دوستو اگر یہ ناول پسند آئے تو آگے ضرور شیئر کیجئے اور ناول کی پی ڈی ایف فائل کے لیے واٹس اپ پر میسیج کریں۔ امید ہے آپ دوست اسے آگے ضرور شیئر کریں گے تاکہ یہ ناول ہمارے حکمرانوں تک بھی چلا جائے اور ہمارہ ملک بھی جنت ریپبلک بن جائے۔ شکریہ رضوان علی گھمن اردو ناول نگار 0039 353 354 3016 Rizwan Ali Ghuman

    56. Asad Siddiqui

      70 saal ka shot pakistan me bhi he 😂😂😂😂

    57. Ali Raza

      Ksa aliza shah pasand ha .i like her she is so cute and her eyes is big

    58. Moin Khitran

      Bogi veel main hawa kitni hoti hy 😂😂😂😂😂😁😁😀😀very fuuny

    59. Naveed Liaquat

      Harame khota drama

    60. Muhammad Bilal

      Dekhne se phle like❤